سابق وزیر خزانہ ڈاکٹرسلمان شاہ نے حکومت کی معاشی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی معاشی شرح نمو صفر پر آگئی ہے ۔

سابق وزیر خزانہ ڈاکٹرسلمان شاہ نے حکومت کی معاشی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک کی معاشی شرح نمو صفر پر آگئی ہے ۔

سلمان شاہ لاہورکے مقامی ہوٹل میں ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت امریکی پالیسیوں پرعمل پیرا ہے جس کی وجہ سے ملک کی معاشی شرح نمو سات فیصد سے گر کر صفر پر آگئی ہے۔ ڈاکٹر سلمان شاہ کا کہنا تھا کہ سابق صدر پرویزمشرف کے دور میں پاکستان میں بیرونی سرمایہ کاری آٹھ ارب ڈالر تھی جو اب صرف ایک ارب ڈالررہ گئی ہے۔سابق وزیرخزانہ نے کہا کہ حکومت نے اگر اب بھی ہوش کے ناخن نہ لیے تو ملک میں بیروزگاری اور مہنگائی کی شرح میںخطرناک حد تک اضافہ ہوگا۔  سٹیٹ بینک پر تقید کرتے ہوئےانہوں نے کہا کہ موجودہ دور حکومت میں آنے والے تمام گورنر سٹیٹ بنک امریکی ڈکٹیشن پر چل رہے ہیں۔ اس موقع پر وفاقی وزیر برائے خوارک و زراعت نذر محمد گوندل نے بھی خطاب کیا۔ان کا کہنا تھا کہ  ملک میں گندم اور دیگر کھانے پینے کی اشیا کی کمی نہیں صرف منافع خوروں کی وجہ سے مہنگائی ہوئی ہے۔