دو لاکھ ٹن کینو برآمد، تین سال بعد ہدف حاصل کر لیا گیا

دو لاکھ ٹن کینو برآمد، تین سال بعد ہدف حاصل کر لیا گیا

کراچی (اے پی پی) پاکستان نے تین سال بعد کینو کی برآمد کا ہدف حاصل کرلیا ہے، یکم دسمبر سے مارچ کے تیسرے ہفتہ تک 2لاکھ ٹن کینو برآمد کئے گئے جس سے 13کروڑ 27لاکھ ڈالر کا زرمبادلہ حاصل ہوا۔ آل پاکستان فروٹ اینڈ ویجیٹبل امپورٹرز ایکسپورٹرز اینڈ مرچنٹس ایسوسی ایشن کے چیئرمین وحید احمد نے ”اے پی پی“ کو بتایا کہ کینو کی برآمدات کا آغاز کسی ایک مقررہ تاریخ سے کئے جانے کے غیر متوقع اور انتہائی مثبت نتائج حاصل ہوئے ہیں اور یکم دسمبر سے مارچ کے تیسرے ہفتہ تک مجموعی طور پر 2لاکھ 21ہزار 200ٹن کینو برآمد کیا جاچکا ہے جس کی مالیت 132.72 ملین ڈالر ہے۔ کینو کی برآمدات کا سلسلہ ابھی جاری ہے اور آئندہ 20 روز میں مزید 10سے 15ہزار ٹن کینو برآمد کئے جانے کی توقع ہے جس سے کینو کی مجموعی برآمد 2 لاکھ 30 ہزار ٹن سے تجاوز کرجائے گی۔ گزشتہ سیزن تک کینو کی برآمدات کے آغاز کے لئے کوئی سرکاری تاریخ مقرر نہیں کی جاتی تھی اور ایکسپورٹرز ایک دوسرے پر سبقت لے جانے اور پہلے ایکسپورٹ کرکے فائدہ اٹھانے کے لئے معیار کو نظرانداز کرتے تھے جلد بازی میں کچے بے رنگ اور کھٹے کینو ہی برآمد کر دیئے جاتے تھے جس سے بیرونی منڈیوں میں پاکستانی کینو کے خریداروں کا اعتماد متاثر ہوتا تھا اور پورے سیزن میں اس کا نقصان اٹھانا پڑتا تھا تاہم اس سال ایسوسی ایشن کی تجویز پر معیار کو یقینی بنانے کے لئے وزارت تجارت نے یکم دسمبر سے قبل کینو کی ایکسپورٹ پر پابندی عائد کر دی جس کے بعد اعلیٰ معیار کا خوش رنگ اور خوش ذائقہ کینو برآمد کیا گیا جو بیرونی منڈیوں میں خریدا گیا اور پاکستانی کینو کی طلب سیزن کے اختتام تک برقرار رہی جس سے نہ صرف پاکستانی کینو کو اچھی قیمت ملی بلکہ برآمدات کے حجم میں بھی اضافہ ہوا۔