اوورسیز انویسٹرز چیمبر کا ریفارم جنرل ٹیکس کے نفاذ، ایس آر او کلچر کے خاتمہ کا مطالبہ

اسلام آباد(اے پی اے ) اوورسیز انویسٹرز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے اگلے مالی سال بیس سو تیرہ، چودہ کے بجٹ تجاویز میں ریفارم جنرل ٹیکس کے نفاذ اور ملک سے ایس آر او کلچر کے خاتمے کا مطالبہ کردیا۔اورر سیز انویسٹرز چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے فیڈریل بورڈ آف ریونیو کو اگلے مالی سال دوہزار تیرہ چودہ کے لئے بجٹ تجاویز دے دی ہے۔ جس میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر اگلے مالی سال سے ریفارم جنرل سیلز ٹیکس کا نفاذ کرے۔ سیلز ٹیکس کی شرح کو سولہ فیصد سے کم کر کے ساڑے بارہ فیصد کیا جائے۔ بجٹ تجاویز میں کہا گیا ہے کہ ملک سے ایس آر او کلچر کا مکمل خاتمے کیا جائے۔ بجٹ تجاویز میں اگلے پانچ برسوں کے لئے ٹیکس نیٹ میں اضافے اور محاصل کو بڑھانے پر فوکس کیا گیا ہے۔ تجاویز میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر ریفامز کر کے ملک میں ٹیکس انتظامیہ کو بہتر بنائے۔