حکومتی قرضوں کے باعث بینکوں میں نقدی کا بحران شدت اختیار کرگیا

حکومتی قرضوں کے باعث بینکوں میں نقدی کا بحران شدت اختیار کرگیا

کراچی(کامرس رپورٹر)حکومت کی جانب سے بجٹ کا خسارہ پورا کرنے کیلئے بینکوں سے بھاری قرضہ لینے کی وجہ سے بینکوں میں نقدی کے بحران میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جبکہ اسٹیٹ بینک کی جانب سے بینکوں کو فوری نقدی کی فراہمی کا سلسلہ جاری ہے۔ بینکوں میں نقدی کے بحران میں کمی کیلئے 30نومبر2012 کو اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے ریورس ری پو اوپن مارکیٹ آپریشن کے تحت بینکوں کو 7دن کی مدت کیلئے اوسطاً 9.01فیصد سالانہ شرح سود پر 5کھرب 45ارب روپے کی نقدی فراہم کی ہے۔ اس سلسلہ میں بینکوں نے مجموعی طورپر 5کھرب 69ارب 55کروڑ روپے کی درخواستیں پیش کی تھیں۔ حکومتی قرضہ گیری کی وجہ سے نجی شعبہ کے قرضوں میں کمی کے علاوہ افراط زر کی شرح میں اضافہ بھی ہورہا ہے۔