ہر چیز 15 فیصد مہنگی ہو گئی ، کرائے بھی بڑھ گئے

ہر چیز 15 فیصد مہنگی ہو گئی ، کرائے بھی بڑھ گئے

لاہور (احسن صدیق) حکومت کی جانب سے پٹرولیم کی قیمتوں میں اضافے کے ساتھ ہی ملک میں مہنگائی کا طوفان شروع ہو گیا ہے، ایک محتاط اندازے کے مطابق کھانے پینے کی اشیا سمیت ہر شے کی قیمت میں 15 فیصد سے زائد اضافہ ہو جائے گا، خاص طور پر رمضان میں پھلوں، سبزیوں، کپڑوں، جوتوں، کاسمیٹکس کی قیمتوں میں اضافہ ہو گا۔ انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک بنکنگ اینڈ فنانس کے چیئرمین ڈاکٹر شاہد حسن صدیقی نے کہا جب تک ملک میں کرپشن بڑھتی رہے گی ٹیکسوں کی چوری جاری رہے گی۔ ریاست اور ریاستی اداروں کے شاہانہ اخراجات بڑھتے رہیں گے۔ اس وقت تک حکومت پٹرولیم کی مصنوعات کے نرخوں میں وقتاً فوقتاً اضافہ کر کے عوام کی زندگی اجیرن بناتی رہے گی اور ملک کی معیشت تباہ ہوتی رہے گی۔ ایگری فورم پاکستان کے چیئرمین ابراہیم مغل نے کہا ڈیزل مہنگا ہونے سے زراعت کے شعبے پر 18 سے 19 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔ پیاف کے چیئرمین سہیل لاشاری نے کہا صنعت اور کاروبار پر شدید منفی اثرات مرتب ہوں گے، ملک میں مہنگائی کا سیلاب آئے گا، کھانے پینے کی ہر چیز مہنگی ہو جائے گی۔ آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر اشرف بھٹی اور قومی تاجر اتاد لاہور کے چیئرمین راجہ حامد ریاض نے کہا مہنگائی میں 15 فیصد سے زائد اضافہ ہو جائے گا۔ مزید برآں لاہور کے بیشتر علاقوں میں 11ویں روزے کو بھی پرچون سطح پر سبزیوں اور پھلوں کی گراں فروشی کا سلسلہ جاری رہا۔ صارفین نے بتایا ایک کلو آلو نیا مقررہ قیمت 32 روپے کی بجائے 40 روپے، پیاز 28 روپے کی بجائے 35 روپے، ٹماٹر 32 روپے کی بجائے 49 روپے، لہسن چائنہ 104 روپے کی بجائے 135 روپے، ادرک چائنہ 59 روپے کی بجائے 65 روپے، پالک 7 روپے کی بجائے 15 روپے، بینگن 18 روپے کی بجائے 23 روپے، کھیرا 28 روپے کی بجائے 35 روپے، بند گوبھی 34 روپے کی بجائے 52 روپے، دیسی ٹینڈے 44 روپے کی بجائے 49 روپے، کریلے 24 روپے کی بجائے 38 روپے، شملہ مرچ 54 روپے کی بجائے 65 روپے، لیموں دیسی 124 روپے کی بجائے 175 روپے، بھنڈی 34 روپے کی بجائے 42 روپے، پھلوں میں ایک کلو سیب کشمیری 49 روپے کی بجائے 85 روپے، سیب گاچہ 124 روپے کی بجائے 210 روپے، خوبانی سفید 74 روپے کی بجائے 94 روپے، آڑو 80 روپے کی بجائے 135 روپے، آم چونسہ سفید 59 روپے کی بجائے 70 روپے، آلو بخارہ 94 روپے کی بجائے 125 روپے، انگور لوگہ 94 روپے کی بجائے 158 روپے، کیلا اول درجن 95 روپے کی بجائے 150 روپے، کھجور اصیل اول 164 روپے کی بجائے 250 روپے اور امرود 64 روپے کی بجائے 80 روپے تک فروخت کئے گئے۔
لاہور (اپنے نمائندے سے) پٹرولیم مصنوعات میں اضافے کے اعلان کے بعد لاہور سمیت مضافاتی علاقوں میں ٹرانسپورٹروں نے ازخود ہی کرایوں میں اضافہ کر دیا۔ اربن ٹرانسپورٹروں نے سٹاپ ٹو سٹاپ کرائے میں 3 روپے اضافہ کیا جبکہ دوسرے شہروں کو جانے والی بس سروس مالکان نے بھی فی سواری 25 سے 30 روپے تک بڑھا دئیے ہیں۔ اربن ٹرانسپورٹ مالکان اور انٹر سٹی بس سروس ایسوسی ایشن نے آج نئے کرائے ناموں کے حوالے سے اجلاس بھی طلب کر لیا ہے مگر کرائے پہلے بڑھا دئیے ہیں۔