بھارت کو سیکولر نہیں ’’ہندو ریاست‘‘ قرار دیا جائے: دھرما رکشامنچ

اسلام آباد (اے پی پی) ہندو مذہبی پیشوائوں نے ممبئی میں منعقدہ اجلاس میں مطالبہ کیا ہے کہ بھارت کو مذہبی ریاست بنایا جائے۔ دھرما رکشا منچ (فورم) کے تحت ہونے والے اس اجلاس میں بھارت بھر کے ہندو گروپوں کے سربراہوں نے شرکت کی تھی۔ وشوا ہندو پریشد کے لیڈر اشوک سنگل اور چنتا پارٹی کے لیڈر سبرامنیم سوامی بھی اجلا س میں شریک ہوئے۔ اجلاس میں واضح کیا گیا کہ ہندو سیکولر ریاست نہیں چاہئے بلکہ بھارت کو مذہبی ریاست قراردیا جائے۔ یہ تجویز سوامی چنمیانند جی مہاراج جی نے پیش کی جس کی دوسرے پیشوائوں نے تائید کی۔ انہوں نے میڈیا سے بھی کہا کہ ’’ہندو دہشت‘‘ کی اصطلاح استعمال نہ کی جائے اجلاس میں متفقہ طور پر یہ بھی قراردیا گیا کہ بھارت ابتداء سے ہی ہندو ریاست ہے اور اس میں دوسرے مذاہب کے پیروکار بھی ہندومت سے ہی تبدیل ہوئے ہیں۔