کراچی: بم دھماکے میں ایک شخص جاںبحق، 4 زخمی، 4 دہشت گرد گرفتار


کراچی (نوائے وقت رپورٹ + ایجنسیاں) کراچی کے علاقے ملیر 15 محبت نگر میں سیمنٹ بلاک بنانے والے تھلے میں بم دھماکہ سے ایک شخص جاںبحق، 4 زخمی ہو گئے۔ اطلاعات کے مطابق ملیر 15 محبت نگر میں واقع شیش محل سٹاپ کے قریب محبت نگر میں سیمنٹ بلاک بنانے والے تھلے میں پیر کی صبح دھماکہ ہو گیا جس کے نتیجے میں 55 سالہ صالح محمد جاںبحق ہو گیا۔ جائے حادثہ سے پولیس کو موبائل فون کے ٹکڑے ملے ہیں۔ ایس ایس پی فاروق اعوان کے مطابق بم دھماکہ میں تقریباً ڈیڑھ کلو گرام دھماکہ خیز مواد استعمال کیا گیا۔ متحدہ کے قائد الطاف حسین نے دھماکے کی مذمت کی ہے۔ کھارادر اور شیرشاہ میں کریکر دھماکے ہوئے۔ سائٹ میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 50 سے زائد وارداتوں میں ملوث مبینہ ٹارگٹ کلر کو گرفتار کر لیا۔ اجمیر نگری پولیس نے 2 بھتہ خوروں کو گرفتار کر لیا، ملزمان کا تعلق کالعدم تنظیم سے بتایا گیا ہے۔ ملزمان پہلے بھی بھتہ خوری، چوری، ڈکیتی اور دیگر الزامات میں مطلوب تھے۔ ایف بی ایریا میں مبینہ پولیس مقابلے کے بعد پولیس نے 4 دہشت گردوں کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا۔ پولیس اور دہشت گردوں کے مابین فائرنگ کا تبادلہ ہوا ہے تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ جوڈیشل مجسٹریٹ غربی محمد افضل نے 10 محرم الحرام کے موقع پر بڑی دہشت گردی کا منصوبہ بنانے اور بھاری مقدار میں دھماکہ خیز مواد سے بھری گاڑی کے ساتھ گرفتار ہونے والے کالعدم تنظیم کے کارکن عطاءالرحمن کو 10 یوم کے جسمانی ریمانڈ پر سی آئی ڈی پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ سی آئی ڈی پولیس نے ملزم کو سخت حفاظتی انتظامات میں پیر کو عدالت میں پیش کیا۔ سی آئی ڈی پولیس نے منگھو پیر میں مقابلے کے دوران ایک دہشت گردکو ہلاک اور ایک کو گرفتار کر کے یوم عاشور کے جلوس پر حملے کرنے کیلئے کھڑی بارود سے بھری ہوئی کار، دھماکہ خیزمواد اور دو موٹر سائیکلیں برآمد کی تھیں۔ گرفتار دہشت گرد نے محرم الحرام کے دوران عباس ٹاﺅن اور اورنگی ٹاﺅن میں ہونے والے بم دھماکوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کیا ہے۔