ایوان صدر اور مقتدر حلقوں میں معاملات طے‘ سیاسی تبدیلیوں کی افواہیں دم توڑ گئیں

اسلام آباد / کراچی ( آن لائن) ایوان صدر اور مقتدر قوتوں کے درمیان معاملات طے پاگئے ہیں جس کے بعد دسمبر میں سیاسی تبدیلیوں کی افواہیں دم توڑ گئیں، ایوان صدر کابینہ میں شامل اہم وزراء سمیت اعلیٰ حکومتی عہدیداروں کو فارغ کرنے پر تیار ہوگیا،جنوری کے پہلے ہفتے تک 17ویں ترمیم بھی ختم کرنے کا حتمی فیصلہ کر دیا گیا ہے۔ مسلح افواج کے سربراہوں کی تقرری کا اختیار وزیراعظم کو منتقل ہو جائے گا۔ ذرائع کے مطابق اس سلسلے میں ملک کی تین اہم شخصیات کے درمیان ملاقات ہوئی ہے جس میں دسمبر میں کابینہ میں ردوبدل کی راہ بھی ہموار ہوئی ہے۔ تقریباً 15 حکومتی وزرائ، مشیر اور عہدیدار کی اکثریت کو فارغ کرنے کے لیے این آر او کو جواز بنایا جائے گا۔ جن میں ایوان صدر کے انتہائی قریب ایک وفاقی وزیر اور مشیر سمیت اہم سفارتکار بھی شامل ہیں۔ حکومت کی جانب سے ان تمام معاملات پر مسلم لیگ (ن) کی قیادت کو بھی اعتماد میں لیا جائے گا۔ یہ بھی معلوم ہواہے کہ اہم عسکری شخصیات کے تحفظات کے بعد بلیک واٹر کی سرگرمیوں کو روکنے کے لئے بھی متعلقہ اداروں کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں۔