پنجاب میں بھی بعض اہم شخصیات کے خلاف کرپشن کی انکوائری ہو رہی ہے: ڈی جی نیب

لاہور(امریز خان/نیشن رپورٹ) ان دنوں رینجرز اور نیب کی طرف سے سندھ میں حکمران پارٹی کے کرپٹ رہنمائوں اور بیوروکریٹس کے خلاف شکنجہ کسا جارہا ے، نیب ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ پنجاب میں بھی بعض اہم شخصیات کے خلاف بھی انکوائری کی جارہی ہیں، ایک سینئر عہدیدار نے نیب انکوائری کی زد میں آنے والی شخصیات کی نشاندہی سے گریز کیا، نیب پنجاب کے ڈی جی سید برہان علی نے ’’دی نیشن‘‘ کو دیئے گئے اپنے خصوصی انٹرویو میں کہا کہ پنجاب میں بھی بری طرح پنجہ گاڑے ہوئی بدعنوانی ہی بری گورننس کی بنیادی وجہ ہے، بدعنوانی ہمارے لوگوں کی نفسیات میں شامل ہوچکی ہے اور کرپشن لوگوں کے رویوں میں شامل ہو چکی ہے لہٰذا معاشرے سے بدعنوانی ختم کرنے میں وقت لگے گا، اگرچہ پنجاب حکومت نے کرپشن کو ختم کرنے کیلئے اقدامات اٹھائے ہیں تاہم یہ اقدامات ناکافی ہیں، انہوں نے کہا کہ لینڈ ریکارڈکو کمپیوٹرائز کرنا بدعنوانی کے خاتمے کی جانب ایک بہتر قدم تھا مگر اس کے اب تک مطلوبہ نتائج سامنے نہیں آئے، برہان علی نے کہا کرپشن نے ہر شعبہ کو تباہ کیا ہے، تعلیم، صحت، سماجی ترقی، انفراسٹرکچر اور معاشی ومالیاتی سٹرکچر کے تمام شعبے کرپشن سے متاثرہ ہیں۔ پنجاب میں کوئی بھی ادارہ کرپشن فری نہیں ہے، انہوں نے کہا ہمیں بڑی تعداد میں بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے عہدیداروں کے خلاف شکایات موصول ہورہی ہیں، ان عہدیداروں کی جانب سے صارفین کو ایڈوانس بل ادا کرنے کہا جاتا ہے، اووربلنگ کی جاتی ہے اور صارفین کو کہا جاتا ہے کہ اضافی رقم بعد میں ری فنڈ کردی جائے گی، انہوں نے کہا پنجاب میں بعض ہائی پروفائل کیسز ہیں تاہم وہ ابھی انکوائری کی سطح پر ہیں لہٰذا انہیں اخبارات میں شائع کرنا مناسب نہیں، ان میں سے اکثر بنک فراڈ، عوام کو دھوکہ دینے، اختیارات کے ناجائز استعمال اور پاور اوورہائوسنگ سیکٹر میں بے ضابطگیوں سے متعلق ہیں، انہوں نے جنرل ریٹائرڈ اشفاق پرویز کیانی کے بھائی میجر (ر) برہان علی کے خلاف ڈی ایچ اے سٹی میں فراڈ کے حوالے سے تحفظات کے حوالے سے بتایا کہ جنرل (ر) کیانی کا بھائی اس معاملے میں براہ راست شامل نہیں ہیں، انہوں نے کہا 16 ارب روپے سے متعلق یہ کیس انتہائی اہم ہے تاہم کیس اس وقت عدالت میں ہے لہٰذا اس کی مزید تفصیلات بتانا مناسب نہیں، انہوں نے بتایا کہ نیب کے اندر متعدد افسران کو اختیارات کے غلط استعمال پر سزائیں دی گئی ہیں۔