میانمار میں جاری مظالم پر حکمرانوں کی خاموشی افسوسناک ہے: حافظ سعید

 بہاولپور (نامہ نگار) امیرجماعة الدعوة پروفیسرحافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ مسلمانوں کے خلاف عالمی پروپیگنڈے سے فائدہ اٹھا کر میانمار میں موجود متعصب بدھسٹ اور ہندوا نتہا پسندتنظیموں کے اراکین مسلمانوں کا صفایا کرنے کی کوششیں کر رہے ہیں۔میانمار میں جاری ہولناک مظالم پر مسلم حکمرانوں کی خاموشی انتہا ئی افسوسناک ہے ۔ڈرون طیارے مسلمانوں کاخون بہا رہے ہیں ،جراتمندانہ راستہ اختیار کیے بغیربیرونی جارحیت پرقابوپاناممکن نہیں۔مظلوم کشمیر یوں اور برمی مسلمانوں کی مدد پوری مسلم امہ پرفرض ہے۔گزشتہ روز جامع مسجد اہلحدیث شکارپوری گیٹ بہاولپورمیں جماعة الدعوةکے زیراہتمام کارکنان کے تربیتی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ میانمار میں مسلمانوں پر عرصہ دراز سے انتہائی سنگین اور انسانیت سوز مظالم ڈھائے جا رہے ہیںلیکن ساری دنیا ان مظالم پر مکمل خاموش ہے کیونکہ متاثرین مسلمان ہیں۔حافظ محمدسعید نے کہا کہ میانمار کے مسلمانوںکی نسل کشی کے معاملے میں عالمی برادری دوہرے معیار کا ثبوت دے رہی ہے۔امریکہ ،بھارت اور اسرائیل تمام تروسائل وٹیکنالوجی کے ہمراہ اسلام ومسلمانوں پرحملہ آور ہیں اور خاص طورپرپاکستان کوعدم استحکام سے دوچار کرنے کی سازشیں کی جارہی ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ ہم عالمی اور قومی سطح پر آواز بلند کریں گے اورمیانمار میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے ہولناک مظالم کو بے نقاب کریں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ بلوچستان،سندھ اور ملک کے دیگر شہروں میں ہونے والی دہشت گردی میں بیرونی ہاتھ ملوث ہے۔اسلام دشمن قوتیں مسلمانوں کو باہم دست و گریبان کرنا چاہتی ہیں۔ اتحادیکجہتی کے بغیر دشمن کی سازشوں کو ناکام بنانا ممکن نہیں۔