معروف اداکار، گلوکار نشیلا انتقال کر گئے، نماز جنازہ آج مغل پورہ میں ہو گی

لاہور (کلچرل رپورٹر) معروف اداکار اور گلوکار نشیلا مختصر علالت کے بعد انتقال کر گئے۔ گزشتہ روز ان کی طبیعت اچانک خراب ہو گئی جس پر انہیں مقامی ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ انتقال کر گئے۔ انہوں نے سوگواروں میں بیوہ، تین بیٹے اور دو بیٹیاں چھوڑی ہیں۔ ان کی نماز جنازہ آج بروز پیر بعد نماز ظہر ان کی رہائش گاہ نزد لال پل مغل پورہ روڈ پر ادا کی جائے گی۔ انہوں نے چالیس سال پہلے تھیٹر سے فنی زندگی کا آغاز کیا۔ ان کے مشہور ڈراموں میں شرطیہ مٹھے اور بشیرا اِن ٹربل شامل ہیں۔ آئی این پی کے مطابق مرحوم کی عمر 65 برس تھی۔ شوبز حلقوں نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے مرحوم کی شوبز کی خدمات پر انہیں خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ نوائے وقت رپورٹ کے مطابق مرحوم کے بیٹے وقار نشیلا نے بتایا ان کے والد کو شوگر اور فالج کا عارضہ تھا۔ این این آئی کے مطابق شوبز سے وابستہ شخصیات نے نشیلا کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اسے فن کیلئے ناقابل نقصان قرار دیا ہے۔ اداکار نشیلا ون مین شو کے طور پر جانے جاتے تھے۔ پنجابی کا مشہور گیت چھلہ بھی انکی مقبولیت کا سبب بنا تھا۔ اداکار نشیلا کے انتقال پر مسعود اختر، عرفان ہاشمی، پروڈیوسر و ڈائریکٹر محمد حنیف، شوکت خلجی، جاوید قیصر، منیر راج، روبی انعم، سخاوت ناز، نسیم وکی، بندیا، کاجل چودھری، زارا ملک، حاجی رزاق، ہنی البیلا، امان اللہ خان، سہیل احمد سمیت دیگر نے شدید رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کی وفات کو فن کے لئے ایک ناقابل نقصان قرار دیا ہے۔