وزیراعظم کی آمد سے قبل رابرٹ فارم کے مزارعین کی احتجاجی ریلی

رحیم یار خان (کرائم رپورٹر) وزیر اعظم کی آمد سے قبل رابرٹ فارم کے درجنوں مزارعین کی گرفتاریوں اور جھوٹے مقدمات کے اندراج کیخلاف احتجاجی ریلی اور دھرنا دیا گیا۔ ریلی میں رابرٹ فارم کے مزارعین میں خواتین شامل تھی۔ احتجاجی ریلی کے شرکاءنے اڈہ خانپور سے سٹی پل تک احتجاجی مارچ کیا کلب چوک کے مقام پر احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے انجمن مزارعین پنجاب کے رہنما شاہنواز نے کہا کہ رابرٹ فارم مزارعین کی ملکیت ہے مزارعین نے کئی سال کی جدوجہد اور محنت کے بعد اس علاقے کو سر سبز بنایا ہے خون دیکر ہریالی لانے والے مزارعین کو سرمایہ داروں نے بےدخل کر دیا ہے جسے کسی صورت قبول نہیں کیا جا سکتا چولستان کی اراضی پر مزارعین کا حق ہے جسے دلائے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے‘ پتن منارہ موومنٹ کے ملک محمد اکبر ‘ جاگ ویلفیئر موومنٹ کے ڈائریکٹر عبدالرب فاروقی ‘ عوامی پارٹی پاکستان کے اشرف پیر جی اور پی ٹی یو ڈی کے رہنما حیدر چغتائی نے کہا کہ رابرٹ فارم کے خریدار مزارعین کیساتھ جھوٹے مقدمات کا اندراج کراکر انہیں گرفتار کروا رہے ہیں حتیٰ کہ چودہ سالہ تنویر افضل کیخلاف بھی جھوٹے مقدمے کا اندراج کیا گیا ہے جو کہ شرمناک فعل ہے۔ انہوں نے کہا کہ مزارعین کے حقوق کی خاطر احتجاج کا سلسلہ جاری رکھا جائیگا اور حقوق کے حصول تک اسے تحریک بنا کر رکھیں گے۔