کئی شہروں میں کلرکوں کی ہڑتال‘ ریلیاں پارلیمنٹ ہاﺅس کے گھیراﺅ کی دھمکی.

سرگودھا + وہاڑی + گوجرانوالہ (نمائندگان + نامہ نگار + نمائندہ خصوصی) تنخواہوں میں اضافہ نہ ہونے اور دیگر مطالبات کے حق میں کئی شہروں میں کلرکوں نے ہڑتال کی‘ مظاہرے کئے اور ریلیاں نکالیں اور پارلیمنٹ ہاﺅس کے گھیراﺅ کی دھمکی دی۔ تفصیلات کے مطابق پے اینڈ پینشن کمیٹی کی سفارشات نظرانداز کرنے کے خلاف سرگودھا کے سینکڑوں کلرکوں اور گریڈ ایک تا سولہ کے ملازمین نے مکمل ہڑتال کی دفاتر کی تالہ بندی کرتے ہوئے ہڑتالی کیمپ لگایا اور محکمہ انہار سے کمشنر آفس تک ریلی نکالی گئی۔ اس موقع پر ملک ذاکر‘ اشفاق جٹ‘ محمد یار‘ ملک منور اقبال و دیگر نے خطاب کرتے ہﺅے کہا کہ حکومت کلرکوں سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کر رہی ہے عدلیہ‘ ٹیچرز‘ پولیس اور فوج اور جیل پولیس کی تنخواہوں میں کئی گنا اضافہ کیا گیا ہے جبکہ کلرکوں کو پہلے کمیٹی بنا کر ٹرخا دیا گیا اور اب رپورٹ میں لیت و لعل سے کام لیا جا رہا ہے۔ وہاڑی سے نامہ نگار کے مطابق کلرکوں اور ملازمین نے مکمل ہڑتال کی اور احتجاجی ریلی نکالی گئی جس کی وجہ سے کسی بھی دفتر میں کوئی کام نہ ہو سکا۔ ملازمین ٹی ایم اے کے دفتر میں جمع ہوئے احتجاجی ملازمین سے خطاب کرتے ہوئے ضلعی صدر شیخ مظہر حسین منور علی گوہر‘ سید علی عباس‘ حیدر نقوی‘ شاہد نوید پوسوال‘ صداقت شیروانی‘ بشیر احمد نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ہمارے مطالبات تسلیم کئے جائیں۔ ضلع گوجرانوالہ کے تمام سرکاری دفاتر مےں مکمل ہڑتال اور تالہ بندی کی گئی۔ محکمہ بلڈنگ کے دفتر مےں احتجاجی جلسہ ہوا جس سے خطاب کرتے ہوئے طاہر بھٹی، مےاں شکور احمد، اقبال گوندل، نے کہا کہ مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رہےگا اور محکمہ بلڈنگ مےں ےعقوب بےگ ہےڈ کلرک کے ساتھ ٹھےکےدار رانا شاہجہاں اور اس کے ساتھےوں کی جانب سے کی گئی غنڈہ گردی کے خلاف احتجاج کےا گےا اور محکمہ بلڈنگ مےں مکمل ہڑتال کا اعلان کر دےا گےا۔