ونامی اب دیہی علاقوں کا رخ کرے گا، الیکشن ملتوی نہیں ہونے دیں گے: عمران


لاہور + ملتان (خصوصی رپورٹر + نوائے وقت رپورٹ) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان ملتان سے گذشتہ روز لاہور پہنچ گئے۔ وہ (آج) پارٹی کے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کریں گے جس میں پارٹی کے یوتھ ورکرز کنونشن کے انتظامات کا جائزہ لیا جائے گا جبکہ کل 20 اکتوبر کو پارٹی رہنما ڈاکٹر یاسمین راشد کی رہائش گاہ پر ”سونامی ڈنر“ میں شرکت کریں گے جو کہ پارٹی کی ممبر شپ بڑھ چڑھ کر کرنے والوں کے اعزاز میں کیا جا رہا ہے۔ قبل ازیں ملتا ن میں صحافیوں سے گفتگو میں عمران خان نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کا سونامی نومبر میں دیہات کا رخ کرے گا۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف مظلوموں کی جماعت ہے، اس لئے کسان دوست پالیسی پارٹی کی ترجیحات میں شامل ہے۔ اگر چھوٹا کاشتکار خوشحال ہو گا تو ملک ترقی کر ے گا۔ ملک میں مسلم لیگ (ن) کی کرپشن کی و جہ سے غریب غریب تر ہو گیا ہے۔ شمالی وزیرستان میں آپریشن کے حوالے سے عمران خان کا کہنا تھا کہ آپریشن سے امن نہیں آ سکتا بلکہ دہشت گردی پھیلتی ہے جس سے نقصان ملک کا ہی ہو گا۔ عمران خان نے کہا کہ تحریک انصاف کسانوں کے مطالبات کو جائز سمجھتی ہے اور ان سے مکمل تعاون کرے گی۔ حکومت ٹی سی پی کے ذریعے کپاس کی خریداری کا فوری اہتمام کرے وگرنہ گندم کا شدید بحران آ سکتا ہے۔ عمران خان نے کہا کہ نومبر میں تحریک انصاف زرعی پالیسی کا اعلان کرنے جا رہی ہے۔ زرعی اصلاحات میں چھوٹے کاشتکاروں کو ریلیف دیا جائے گا۔ قبل ازیں مخدوم شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی پنجاب کے مفادات کے تحفظ کے دعوے کرنے والے اگر واقعی کاشتکاروں سے ہمدردی رکھتے ہیں تو انہیں فوری طور پر کاشتکاروں کو ریلیف دینے کے لئے ٹی سی پی کو متحرک کر کے کپاس کی خریداری کو یقینی بنانا چاہئے۔ ایک سوال کے جواب میں عمران خان نے کہا کہ ملالہ پر حملہ اور وزیرستان پر فوجی آپریشن کی آڑ میں حکومت الیکشن ملتوی کرانا چاہتی ہے جبکہ پی ٹی آئی الیکشن ملتوی نہیں ہونے دے گی۔