صہبا مشرف نے شوہر کو اشتہاری قرار دینے‘ جائیداد ضبط کرنے کے خلاف درخواست دائر کر دی

راولپنڈی (نیوز رپورٹر) سابق صدر جنرل پرویز مشرف کی اہلیہ صہبا مشرف نے جمعہ کے روز انسداد دہشت گردی کی عدالت راولپنڈی میں درخواست دائر کی ہے کہ ان کی جائیداد اور بنک اکا¶نٹس ضبط کرنے اور مشرف کو اشتہاری قرار دینے کا فیصلہ واپس لیتے ہوئے جائیداد اور اکا¶نٹس بحال کئے جائیں۔ اپنی درخواست میں صہبا مشرف نے عدالت سے استدعا کی کہ ان کے شوہر سابق صدر پرویز مشرف کو اشتہاری قرار دے کر ان کی جائیداد کی ضبطگی اور بنک اکا¶نٹس کو منجمد کیا گیا ہے۔ اس فیصلے کے تحت چک شہزاد میں مکان نمبر C-1-B اور سنگھار ہا¶سنگ کالونی گوادر میں پلاٹ اور سٹیٹ بینک کی جانب سے جاری کردہ خط کے مطابق بینک اکا¶نٹس محترمہ بے نظیر بھٹو کیس میں منجمد کئے گئے ہیں یہ سارا کام تیزی سے عمل میں لایا گیا اور حقائق کو پیش نظر نہیں رکھا گیا۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عدالت کی جانب سے چک شہزاد فارم ہا¶س اور جائیدادوں کی ملکیت کے حوالے سے درخواست گزار کی جانب سے سرزد ہوئی ہے۔ ان جائیدادوں اور بنک اکا¶نٹس کی بحالی کے لئے وہ غلطی ہی کافی بنیاد فراہم کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عدالت کو اس معاملے میں گمراہ کیا گیا اور پراسیکوشن نے بدنیتی کے تحت سنگھار کالونی گوادر کے پلاٹ کے حوالے سے غلط اطلاعات عدالت کو فراہم کی اور ہم اس حوالے سے درست اطلاعات عدالت کے سامنے پیش کریں گے۔
صہبا مشرف