جعل سازی سے قرضہ دینے پر نیشنل بنک کے موجودہ اور سابق صدور، اعلیٰ افسروں پر مقدمہ


لاہور (احسن صدیق) ایف آئی اے کرائم سرکل نے جعلسازی کے ذریعے 41کروڑ 70لاکھ قرضہ جاری کرنے کا الزام ثابت ہونے پر نیشنل بینک کے سابق صدر علی رضا، موجودہ صدر قمر حسین جو اس وقت بینک کے چیف آپریٹنگ آفیسر تھے، کے سمیت اعلیٰ آفیسرز کے خلاف ایف آئی آر نمبر 12/2012 درج کر لی ہے اور نیشنل بینک کے ایگزیکٹو نائب صدر ارتضیٰ کاظمی کو گرفتار کر لیا ہے۔ ذرائع کے مطابق باقی آفیسرز ایف آئی آر میں نامزد ہیں۔ وہ ضمانت قبل از گرفتاری کے لئے کوشش کر رہے ہیں۔ 2010ءمیں نیشنل بینک کی کریڈٹ کمپنی نے ایک ہیلی کاپٹر کمپنی کو 41.7کروڑ روپے کا قرضہ قوانین کے خلاف جاری کیا گیا تھا۔ ذرائع نے بتایا کہ ایف آئی اے نے نیشنل بینک کے گرفتار کئے جانے والے ایگزیکٹو نائب صدر سے تفتیش شروع کر دی ہے۔