جناح ہسپتال : ڈاکٹر نے نرس کو تھپڑ دے مارا ‘ نرسوں کا احتجاج‘ مریضوں کو مشکلات

جناح ہسپتال : ڈاکٹر نے نرس کو تھپڑ دے مارا ‘ نرسوں کا احتجاج‘ مریضوں کو مشکلات

لاہور (نیوز رپورٹر) جناح ہسپتال میں ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے رہنما کی جانب سے آئی وارڈ کی نرس کو تھپڑ مارنے پر ہنگامہ کھڑا ہوگیا جس پر نرسوں نے ہڑتال، احتجاج کیا جس کے باعث مریضوں کو دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔ سیکرٹری صحت کے حکم پر ایم ایس نے تحقیقات کروا کر فریقین میں صلح کرا دی۔  گزشتہ روز ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے رہنما ڈاکٹر ابوبکر گوندل اپنی والدہ کو لے کر آئے آئوٹ ڈور گئے جہاں ڈیوٹی پر موجود سٹاف نرس عائشہ سے تلخ کلامی ہوگئی جس پر ینگ ڈاکٹر نے تھپڑ مار دیا جس پر نرسیں برہم ہوگئیں اور کام سے انکار کرتے ہوئے احتجاج شروع کردیا، صورتحال کا نوٹس لیتے ہوئے سپیشل سیکرٹری صحت بابر حیات تارڑ نے 12گھنٹے کے دوران ایم ایس جناح ہسپتال سے واقعہ کی انکوائری رپورٹ طلب کی جس پر ایم ایس جناح ہسپتال نے فوری طور شعبہ امراض چشم کے سربراہ پروفیسر ندیم حفیظ بٹ کی سربراہی میں اے ایم ایس ڈاکٹر اظہر اور نرسنگ سپرنٹنڈنٹ طاہرہ جمیل پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی۔ انتظامیہ نے فریقین میں صلح کرائی، ذرائع کے مطابق ڈاکٹر ابوبکر کے معافی مانگنے پر نرسوں نے احتجاج ختم کر دیا۔