کرپشن، سابق اسرائیلی وزیراعظم ایہود اولمرٹ کو عدالت نے مجرم قرار دیدیا‘ 5 سال سزا ہو سکتی ہے

مقبوضہ بیت المقدس (بی بی سی اردو) اسرائیلی عدالت نے سابق وزیراعظم ایہود اولمرٹ کو اپنے دوست کو فائدہ پہنچانے کے الزام میں مجرم قراردیدیا جبکہ دو بڑے الزامات سے بری کردیا ہے۔ عدالت سزا بعد میں سنائے گی۔ انہیں رشوت ستانی اور چندہ جمع کرنے کی مہم کے دوران جعلی بل پیش کرنے جیسے بدعنوانی کے الزامات سے بری کر دیا گیا۔ الزامات کے تحت انہیں جیل کی سزا بھی ہو سکتی ہے۔ اولمرٹ 1993ء سے 2003ء تک یروشلم کے میئر رہے اور پھر اسرائیلی کابینہ میں تجارت کے وزیر بنے دو ہزار چھ میں ایریل شیرون کی بیماری کے بعد وزیراعظم بنے۔ این این آئی کے مطابق انہیں 5 سال تک قید کی سزا ہو سکتی ہے۔ کسی بھی اسرائیلی وزیراعظم پر پہلی بار مقدمہ چلایا گیا ہے۔