سیلاب ہمارے اعمال کا نتیجہ ہے، جمعہ کو یوم توبہ منایا جائے: حنیف جالندھری

لاہور (خصوصی نامہ نگار)وفاقی المدارس العربیہ پاکستان کے ناظم اعلیٰ قاری حنیف جالندھری نے کہاہے کہ ملک بھر میں سیلاب کی تباہ کاریاں ہمارے اعمال کا نتیجہ ہے۔ اللہ کی ناراضگی کو دور کرنے کیلئے قوم کو اجتماعی طور پر گناہوں سے توبہ کرنی چاہئے۔ علما ءجمعة المبارک کو یوم توبہ اور دعا کے طور پر منائیں اور نماز جمعہ کے اجتماعات میں سیلاب متاثرین کے ساتھ یکجہتی، ہمدری اور ایثار کا درس دیں۔ استغفار کا اہتمام کریں۔ گذشتہ روز جامعہ اشرفیہ میں مولانا حافظ فضل رحیم، حافظ اسعد عبید اور مجیب الرحمان انقلابی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے قاری حنیف جالندھری نے کہاکہ مرکزی اور صوبائی حکومتیں سیلاب متاثرین کے نام پر سیاست کرنے اور پوائنٹ سکورنگ کی بجائے عملی اقدامات کرےں اور ان کو بروقت امدادی اشیاءکی فراہمی یقینی بنائی جائے انہوں نے الزام عائد کیا کہ حکومتیں متاثرین سیلاب کو محفوظ مقامات پر منتقل کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہےں ۔انہوں نے کہاکہ یہ صرف سیلاب نہیں بلکہ اللہ تعالیٰ کی ہم سے ناراضگی ہے اور سیلاب کی وجہ سے زلزلے سے زیادہ تباہی آئی ہے اس لئے ضرورت ہے کہ ملک بھر کے علماءجمعة المبارک کے روز یوم توبہ اور استغفار کا اہتمام کریں اور پوری قوم کی طرف سے سیلاب متاثرین کی مدد کرنا ہمارا قومی و دینی فریضہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ یہ وقت اختلافات کا نہیں بلکہ متحد ہونے کا ہے۔انہوں نے کہاکہ زلزلہ متاثرین کےلئے کام کرنے والی رفاہی تنظیموں کو سیلاب متاثرین کی امداد کی بھی اجازت دی جائے۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت کے پاس دینی مدارس کے دہشت گردی میں ملوث ہونے کے متعلق ثبوت ہیں تو انہیں سامنے لایا جائے۔ انہوں نے کہاکہ ہم میڈیا پر لگائی جانے والی پابندیوں کی مذمت کرتے ہیں۔ فضل الرحیم نے بتایا کہ جامعہ اشرفیہ نے سیلاب متاثرین کے لئے 9ٹرک سامان بھجوا دیا ہے جبکہ مزید امدادی سامان چند روز میں روانہ کر دیا جائے گا۔