واربرٹن: قرآن پاک کی بے حرمتی کیخلاف شٹر ڈاﺅن، احتجاجی مظاہرہ


واربرٹن ( نامہ نگار) قرآن پاک کی بے حرمتی کیخلاف شہر بھر میں شٹر ڈاﺅن رہا اور شہریوں نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ پولیس کی بھاری نفری طلب کر لی گئی۔ بتایا گیا ہے کہ غلہ منڈی واربرٹن ڈاکخانہ بازار میں واقع ایک مسجد و مدرسہ سے چند شرپسند عناصر نے قرآن پاک کی بے حرمتی کی جسے دیکھتے ہی عوام نے شور مچا دیا۔ لوگوں کی بڑی تعداد جمع ہو گئی۔ اطلاع ملنے پر انسپکٹر حاجی محمد اکرم گجر پولیس نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے جنہوں نے مدرسہ میں چھاپہ مارا۔ عملہ اور طلباءکمروں کو تالے لگا کر غائب ہو چکے تھے۔ عوام نے احتجاج شروع کر دیا۔ دوکانیں اور بازار بند کر دیئے گئے اور احتجاجی جلوس لے کر تھانہ واربرٹن پہنچ گئے جہاں پر ڈی پی او ننکانہ غلام مبشر میکن، ڈی ایس پی ننکانہ سرکل زوار حسین شاہ بھی پہنچ گئے۔ لوگوں کے احتجاج میں شدت کو دیکھتے ہوئے مزید پولیس کی نفری طلب کر لی گئی۔ بعد ازاں ضلعی امن کمیٹی اور ختم نبوت ضلع ننکانہ کے حاجی عبدالحمید رحمانی مولانا ڈاکٹر محب النبی بھی واربرٹن پہنچ گئے جنہوں نے مقامی علمائے کرام اور شہریوں سے مذاکرات کے بعد انتظامیہ سے مذاکرات کئے اور عوام کو پر امن رہنے کی اپیل کی۔ مذاکرات میں فیصلہ ہوا کہ نامعلوم ملزمان کے خلاف فوری مقدمہ درج کیا جائے گا اور ملزمان کی نشاندہی کا فیصلہ دس رکنی کمیٹی جس میں حاجی عبدالحمید رحمانی، سید محسن رضا کاظمی، میاں نذیر احمد نارگ، مولانا محمد بلال چشتی اور محمد یٰسین بھی شامل ہیں کرے گی۔ دوکانداروں نے آج بھی مکمل شٹر ڈاﺅن اور ملزمان کی گرفتاری تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ مقدمے کا مدعی محمد عثمان خان بابا کو بنایا جا رہا ہے۔