لانگ مارچ میں شرکت نہیں کریں گے، غیر جانبدار نگران حکومت نہ بنی تو احتجاج ہو گا: عمران


پشاور + کراچی (این این آئی + آئی این پی) تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کو دلدل سے نکالنے کا راستہ صرف شفاف انتخابات ہیں، طاہر القادری کے لانگ مارچ میں شریک نہیں ہوں گے، ملک کی دو بڑی پارٹیاں بندر بانٹ میں مصروف ہیں، اگر غیر جانبدار عبوری حکومت نہ بنی تو احتجاج کیا جائے گا۔ پشاور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ آئندہ عام انتخابات ملک کی سمت کا تعین کریں گے۔ قاضی صاحب سیاست میں ہمارے ساتھ اکٹھے تھے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا قاضی حسین احمد ایک اچھے دوست تھے وہ جو بھی بات کرتے تھے ملک کے لئے کرتے تھے۔ علاوہ ازیں ایک انٹرویو میں عمران خان نے کہا ہے کہ حکومت نے ابھی نگران تعینات ہی نہیں کئے تو طاہر القادری کا لانگ مارچ کس لئے؟ لانگ مارچ طاہر القادری کا اپنا فیصلہ ہے، تحریک انصاف اس وقت لانگ مارچ کرے گی جب نگران غیر جانبدار نہ ہوں، ہمیں الیکشن کمشن پر اعتماد ہے جب تک گورننس ٹھیک نہیں ہو گی ٹیکس کولیکشن درست نہیں ہو گی، بھارت کے ساتھ برابری کی سطح پر تعلقات ہونے چاہئیں۔ افغان لوگ پالیسیز کی وجہ سے پاکستان سے نفرت کرتے ہیں حالانکہ ہم نے افغانستان کیلئے بہت کچھ کیا ہے، جس معاشرے میں عدل و انصاف ختم ہو جائے عام آدمی کی بنیادی ضروریات پوری نہ ہوں، حکمران کسی اور ملک کی غلامی کریں وہ معاشرہ چل نہیں سکتا۔