سپریم کورٹ نے سزائے موت کے قیدیوں کی رحم کی اپیلوں کا ریکارڈ طلب کر لیا


اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ نے سزائے موت کے قیدیوں کی رحم کی اپیلوں سے متعلق مکمل ریکارڈ 2 ہفتوں میں طلب کر لیا ہے۔ جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں جسٹس سرمد جلال عثمانی اور جسٹس اعجاز افضل پر مشتمل تین رکنی بنچ نے رحم کی اپیلوں کے حوالے سے ڈاکٹر یعقوب بھٹی کی درخواست کی سماعت کی تو ان کے وکیل بیرسٹر ظفر اللہ کا کہنا تھا کہ اعلی عدالتوں میں 916 اور صدر مملکت کے پاس 441 رحم کی اپیلیں زیر التوا ہیں۔ بین الاقوامی قوانین کے مطابق انسانوں سے انسانوں کا سلوک ہونا چاہئے کوئی ظالمانہ سزا نہیں ہونی چاہئے ملک بھر میں 8 ہزار سے زائد ایسے کیسز میں اپیلیں ہیں انہوں نے عدالت سے ان اپیلوں کا جلد فیصلہ کرنے کی استدعا کی جس پر فاضل عدالت نے اٹارنی جنرل کو ریکارڈ دو ہفتوں میں پیش کرنے اور آئندہ سماعت پر خود پیش ہونے کا حکم جاری کرتے ہوئے سماعت ملتوی کر دی۔