بلوچستان پر ہمیشہ نوابوں اور سرداروں نے اپنے لئے حکومت کی : گورنر مگسی


ڈےرہ الہ یار (آن لائن) گورنر بلوچستان نواب ذوالفقار علی مگسی نے کہا ہے کہ قیام پاکستان سے لیکر ہمیشہ بلوچستان سے زیادتیاں کی گئی ہےں، جس میں وفاقی حکومت سمیت صوبائی حکومت بھی ذمہ دار ہے، بلوچستان میں ہمیشہ نوابوں اور سرداروں نے حکومت کی ہے جو اپنے لئے حکومت کرتے ہیں اور چلے جاتے ہیں، بلوچستان کی پسماندگی میں صرف وفاقی حکومت نہیں صوبے میں حکومت کرنے والے بھی صوبے کی پسماندگی کے ذمہ دار ہیں۔ یہ بات انہوں نے سوئی میں کچھی کینال کے دوبارہ کام شروع ہونے کا افتتاح کے موقع پر منعقدہ جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے فنڈز اسلام آباد سے تو ریلیز ہو جاتے ہیں پھر صوبے کے فنڈز ملتان یا نوابشاہ منتقل ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کچھی کینال کے منصوبے کو بہت پہلے مکمل ہو جانا چاہئے تھا مگر سالوں سال گزر گئے مگر ابھی تک یہ منصوبہ چل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی سڑکیں انتہائی خستہ حالت ہیں مگر وفاقی اور صوبائی حکومتیں اس پر کوئی کام نہیں کر رہیں جس سے نیشنل ہائی وے پر روزانہ سفر کرنے والے لاکھوں افراد کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اس سے قبل چیئرمین واپڈا سید راغب عباس نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کچھی کینال کا منصوبہ 5 سو کلومیٹر تک مشتمل ہے۔ مارچ 2013ءتک ڈیرہ بگٹی تک پانی پہنچ جائے گا جس سے 55 ہزار ایکڑ زرعی زمین آباد ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ اس کے علاوہ نولنگھ ڈیم، وندر پراجیکٹ اور ہائیڈرو پر بھی کام تیزی سے جاری ہے۔