بلدیہ فیکٹری دہشتگردی کا نہیں مالکان کی غلطی سے ہونیوالا حادثہ تھا، متحدہ کے پاس کارکن نہیں ٹھیکے دیکر جلسہ گاہ میں لائٹس لگائی گئیں: مصطفیٰ کمال

کراچی، حیدر آباد ( خصوصی رپورٹر+وقائع نگار+ نوائے وقت رپورٹ) پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ پاکستان کی خاطر لوگوں کو پاک سر زمین پارٹی سے جڑنا ہوگا۔ حیدرآباد میں پاک سر زمین پارٹی کی ممبر سازی مہم کا آغاز کررہے ہےں، ہمیں فرقہ پرستی سے بالا تر ہو کر متحد ہونا ہوگا، ان خیالات اظہار انہوںنے حیدر آباد روانگی سے پہلے میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس مو قع پر انیس قائم خانی، رضاہارون، انیس ایڈوکیٹ، افتخار عالم، ڈپٹی مئیر کراچی ارشد وہرا،دیگر ذمہ داران بھی موجود تھے ۔ انہوں نے کہاکہ پہلے بانی تحریک نے مہاجروں کو لوٹا اب یہ چھوٹا اداکار لوٹ رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سانحہ بلدیہ کے مالکان لندن اور کینیڈا میں بیٹھے ہوئے ہیں، عدالت میں پیش کیوں نہیں ہو رہے، بلدیہ فیکٹری کی انشورنس جرمنی میں ہوئی تھی، تنخواہ بٹتے وقت آگ شارٹ سرکٹ سے لگی،سانحہ بلدیہ کے شہداءکے ساتھ زیادتی ہے کہ انہیں انصاف نہیں ملا،بلدیہ فیکٹری دہشتگردی کا نہیں بلکہ مالکوں کی غلطی سے ہونے والا حادثہ تھا۔ مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ حیدر آباد سے ووٹ لیکر ایم این اے، ایم پی اے بننے والے یہاں جلسہ کر رہے ہیں جلسہ وہ کرتے ہیں جن کے پاس ایم این اے، ایم پی اے نہیں ہوتے انہوں نے بانی ایم کیو ایم کی پارٹی پر چائنہ کٹنگ کرکے اپنی پارٹی بنالی شہریوں سے کہتا ہوں کہ انہیں ایم کیو ایم پاکستان کے جلسے میں جانا چاہئے عوام ان سے پوچھیں تم کو ووٹ دیدیا اب کیا مانگ رہے ہو ان کے پاس کارکن نہیں ٹھیکے دیکر جلسہ گاہ میں لائٹس لگائی گئیں ۔
مصطفی کمال