سیاسی کیریئر شروع نہیں کر رہا، کل متاثرین کےلئے امداد کاﺅنٹر کا افتتاح کرونگا: بلاول

لندن (آصف محمود سے + ریڈیو مانیٹرنگ) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وہ اپنے سیاسی کیریئر کا آغاز نہیں کر رہے اور کل ہفتے کے روز برمنگھم مےں پاکستان پیپلز پارٹی کے کنونشن مےں شریک ہونے کی بجائے پاکستانی ہائی کمشن لندن مےں شمالی پاکستان مےں سیلاب کی تباہ کاریوں سے متاثرہ افراد کےلئے لگائے جانے والے کیمپ مےں عطیات کے کاﺅنٹر کا افتتاح کریں گے۔ لندن سے جاری ہونےوالے بیان مےں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وہ مستقبل مےں پڑھنے کا ارادہ رکھتے ہےں اور اپنے نانا کی طرح قانون کی تعلیم حاصل کریں گے۔ قانون کو سمجھنا اور اسی پر عملدرآمد کروانا سیاستدانوں اور پاکستان مےں جمہوریت کی مضبوطی کےلئے نہایت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کی والدہ بے نظیر بھٹو کی شہادت کے بعد پوری دنیا کے میڈیا نے مجھے انٹرویو کرنے کےلئے درخواستیں کیں لیکن آخرکار میڈیا نے مجھے تعلیم کے دوران مجھے تنگ نہ کر کے میری مدد کی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ میڈیا آئندہ بھی ان کی پڑھائی کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کا ساتھ دے گا۔ انہوں نے کہا کہ وہ مستقبل مےں میڈیا، انٹرنیشنل کمیونٹی اور خصوصاً پاکستانی عوام کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتے ہےں تاکہ پاکستان مےں جمہوریت کو مضبوط کیا جاسکے اور انتہا پسندی کا قلع قمع کیا جاسکے جس نے مجھ سے میری ماں چھین لی اور اب پوری دنیا کے لئے خطرہ ہے۔ سیاسی حلقوں کا کہنا ہے بلاول بھٹو زرداری کی طرف سے جاری ہونے والا یہ بیان شدید ترین عوامی ردعمل کا نتیجہ ہے جس مےں صدر زرداری کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا کہ وہ سیلاب زدگان کو چھوڑ کر اپنے بیٹے کے سیاسی کیریئر کے آغاز کےلئے خصوصی طور پر برطانیہ گئے ہےں۔ یہ اور بھی قابل ذکر ہے کہ بلاول بھٹو زرداری نے یہ بیان اپنے دستخطوں کے ساتھ بھیجا ہے، ہفتے کو برمنگھم مےں ہونےوالے پیپلز پارٹی کے کنونشن مےں صدر آصف علی زرداری مہمان خصوصی ہونگے۔ بلاول بھٹو زرداری کے کنونشن مےں نہ آنے کے اچانک فیصلے پر کارکنوں مےں مایوسی پھیل گئی ہے۔