حکمران امریکی ڈکٹیشن کے بغیر کوئی کام بھی نہیں کرسکتے: عمران خان

لاہور ( نیوزایجنسیاں) تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ ہماری نہیں بلکہ امریکہ کی ہے ،ملک میں دہشت گردوں کے 30 گروپ موجود ہیں ان کو
علیحدہ علیحدہ کر کے ختم کیا جا سکتا ہے، حکمران بلٹ پروف گاڑیوں مےں گھوم رہے ہےں اور بے گناہ عوام سڑکوں پر مر رہے ہےں، بیلٹ پیپرز کے ذریعے تبدیلی کا راستہ روکا گیا تو ملک مےں خونیں انقلاب آئےگا۔ حضرت داتا گنج بخش علی ہجویری کے مزار کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا ہے کہ ملک میں فرقہ واریت کو فروغ دیا جارہا ہے، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کو غداروں اور میر جعفروںنے دھکیلا ہے، انہوں نے کہا کہ ہمارے حکمران امریکی ڈکٹیشن کے بغیر کوئی کام بھی نہیں کرسکتے اے پی سی کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ دریں اثناءایک انٹرویو مےں انہوں نے کہا کہ وزیراعظم اور پارلیمنٹ ربڑ سٹمپ ہیں، فیصلوں اور اختیارات کا محور صدر زرداری ہیں، کرپٹ سیاستدان، وکلاءاور بیورو کریٹ چیف جسٹس کیخلاف سازشیں کر رہے ہیں، آخری دم تک چیف جسٹس کا ساتھ دوں گا، فضل الرحمن کی اپوزیشن ن لیگ کی اپوزیشن سے بہتر ہے، رینٹل پاور سکینڈل پر اپوزیشن حکومت گرا سکتی تھی، نواز شریف امریکیوں سے ملے ہوئے ہیں، انہوں نے اپنی دولت ایک کروڑ 20 لاکھ شو کی ہے جبکہ ان کی گھڑی اس سے زیادہ قیمت کی ہے۔