بینظیر کیس : تحقیقات روکنے کی درخواست کی نہ قاتلوں کو چھوڑینگے: رحمن ملک

نوڈیرو (آن لائن + ریڈیو نیوز) وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ حکومت نے اقوام متحدہ کو شہید بے نظیر بھٹو کے قتل کی تحقیقات روکنے اور رپورٹ میں تاخیر کرنے کی کوئی درخواست نہیں کی ہے۔ اقوام متحدہ کمشن کی رپورٹ میں اس لئے تاخیر ہوئی ہے کہ افغانستان ، متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب نے شہید بے نظیر بھٹو کی پاکستان آمد پر خطرات کا خدشہ ظاہر کیا تھا۔ اس لئے ان ممالک سے معلومات لے کر کمشن کی رپورٹ میں شامل کرنے کے لئے اقوام متحدہ کو خط لکھا گیا ہے اتوار کے روز گڑھی خدا بخش بھٹو میں مزار پر حاضری دینے کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے رحمن ملک نے کہا کہ کمشن کی رپورٹ آنے کے بعد اسے منظر عام پر لایا جائیگا اور شہید بے نظیر بھٹو کے قاتلوں کو نہیں چھوڑیں گے۔ پاکستان میں بھی تین تحقیقاتی ٹیمیں کام کر رہی ہیں رحمن ملک نے کہا کہ بے نظیر بھٹو کسی بھی ڈیل کے ذریعے پاکستان نہیں آئی تھیں مگر مشرف ان کی پاکستان آمد کے مخالف تھے اور بے نظیر بھٹو نے مشرف پر یہ واضح کیا تھا کہ وہ اپنی مرضی سے پاکستان آئیں گی۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ کراچی میں ٹارگٹ کلنگ بند ہو گئی اور امن و امان کی صورتحال بہتر ہے بلوچستان میں لاپتہ افراد کی تعداد 1100 کے قریب ہے۔ افغانستان میں بھارت مداخلت کر رہا ہے۔