نیوز

02 نومبر 2017

لاہور (کامرس رپورٹر ) سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر افتخار علی ملک نے کہا ہے کہ سارک ملکوں کے درمیان تجارت کے فروغ کیلئے سارک ویزا ایگزمپشن سٹکرز کے نظام کو فوری طور پر بحال کیا جائے ۔اس سے خطے میں تجارت کے فروغ،غربت کے خاتمے، ترقی کی رفتار تیز کرنے ، خوشحالی اور لوگوں کی فلاح و بہبود کی سرگرمیاں تیز کرنے میں مدد ملے گی۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے مقامی ہوٹل میں بنگلہ دیش، سری لنکا، بھوٹان، نیپال،مالدیپ اور افغانستان سے تعلق رکھنے والے اقتصادی رپورٹرز سے گفتگو کے دوران کیا۔افتخار علی ملک نے کہا کہ کاروباری شخصیات کیلئے آزاد ویزا پالیسی ،حساس لسٹ میں کمی، پیرا ٹیرف اور نان ٹیرف اقدامات کا خاتمہ اور دیگر مسائل حل کیے جائیں۔ جنوبی ایشیائی ملکوں کو چاہئیے کہ دنیا بھر میں ہونے والی عصر حاضر کی تبدیلیوں کو اپنائیں۔ مخصوص سیاسی سوچ جنوبی ایشیاءمیں اقتصادی آزادی کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔



ڈیجیٹل فارمیٹ میں اس خبر کو پڑھنے کے لئے یہاں کلک کریں