عوام سراپا احتجاج ہیں، حکومت فوری نیٹو سپلائی روکنے کا اعلان کرے: منور حسن

 لاہور (خصوصی نامہ نگار) امیر جماعت اسلامی سید منور حسن نے کہا ہے کہ حکومت فوری طور پر نیٹو سپلائی روکنے کا اعلان کرے، عوام نیٹو سپلائی کے خلاف پورے ملک میں سراپا احتجاج ہیں کیونکہ امریکی اسلحہ افغانوں کے ساتھ ساتھ پاکستانی قبائل اور شہروں میں دہشت گردی میں استعمال ہو رہا ہے۔ حکومت امریکی جنگ سے باہر نکلے، آئی ایم ایف کی شرائط پر لگائے گئے بھاری ٹیکسوں اور بجلی تیل گیس سمیت تمام ضروریا ت زندگی کی قیمتوں میں بے تحاشا اضافے نے عوام کو بدترین مہنگائی سے دوچار کر دیا ہے۔ توقع رکھتے ہیں کہ جنرل راحیل شریف اپنے پیشرو جنرل کیانی کے نقش قدم پر چلتے ہوئے فوج کو سیاست سے دور رکھیں گے ۔ ایک طرف پورا ملک امریکہ کی لگائی ہوئی دہشتگردی کی آگ میں جل رہا ہے تو دوسری طرف بھارت و اسرائیل کی ناپاک نظریں پاکستان کے ایٹمی پروگرام کو رول بیک کرانے پر لگی ہوئی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی کے پانچ روزہ دورہ سے واپسی پر منصورہ میں کارکنوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سید منورحسن نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کی جنگ میں اب تک نقصان ہی اٹھایا، اپنی عزت و وقار، آزادی اور امن و سلامتی کو بھی داﺅ پر لگایا اور ایک سو ارب ڈالر کا معاشی نقصان برداشت کیا، امریکہ اور نیٹو پاکستان کو غیر مستحکم کرنے میں مصروف ہیں۔ امریکی و بھارتی سازشوں کی وجہ سے افغان عوام کے ساتھ ہمارے صدیوں پرانے رشتوں میں دراڑیں پڑ گئی ہیں اور ہمارا یہ محفوظ ترین بارڈر غیر محفوظ ہو گیا ہے۔
منور حسن