مصری فوج کی اخوان مظاہرین پر فائرنگ ظلم کی انتہا ہے: حامد رضا

لاہور (خصوصی نامہ نگار) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے راہنماﺅں صاحبزادہ حامد رضا، علامہ محمد شریف رضوی، پیر محمد اطہر القادری، محمد نواز کھرل، پیر سیّد محمد اقبال شاہ، مفتی محمد سعید رضوی، صاحبزادہ عمار سعید سلیمانی، مفتی محمد حسیب قادری، مفتی محمد کریم خان، شیخ ذوالفقار رضوی، مولانا محمد اکبر نقشبندی اور میاں فہیم اختر نے کہا ہے کہ مصری فوج کے ہاتھوں مرسی کے حامیوں کی ہلاکتیں قابل مذمت ہیں۔ مصری فوج نے پرامن اخوان مظاہرین پر بلاجواز فائرنگ کر کے ظلم کی انتہا کر دی ہے۔ عالمی برادری، اقوام متحدہ اور او آئی سی مصر کے بحران کے حل کے لیے اپنا کردار ادا کرے۔ راہنماﺅں نے مزید کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کے بائیکاٹ سے صدارتی الیکشن متنازع ہو گیا ہے۔ الیکشن تو ہو جائے گا لیکن ناگوار صورتحال ملکی مفاد میں نہیں ہو گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ مسلم لیگ ن کا ایم کیو ایم سے ہاتھ ملانا موقع پرستی ہے۔ نوازشریف ایم کیو ایم کی گرتی دیوار کو سہارا دے رہے ہیں۔ مرسی اور اخوان قیادت کی رہائی کے لیے اقوام متحدہ مصری حکومت پر دباﺅ ڈالے۔