سیرت مصطفوی پر عمل کرکے ملک کو ترقی یافتہ بنایا جا سکتا ہے: عطاءمحمد مانیکا

لاہور (خصوصی رپورٹر) صوبائی وزیر اوقاف و مذہبی امور میاں عطاءمحمد مانیکا نے کہا ہے کہ ہم جس دین کے پیروکار ہیں‘ اس نے انسانی جان کی حرمت کو سب سے اہم قرار دیا ہے۔ پاکستان کے تمام مسالک کے افراد کیلئے ازحد ضروری ہے کہ دین اسلام کی تعلیمات پر عمل پیرا ہوکر برداشت‘ پیار‘ بھائی چارہ کی فضا قائم کی جائے اور ہم آہنگی کے فروغ کیلئے علماءکرام کو چاہئے کہ وہ بھرپور کردار ادا کریں۔ یہ بات انہوں نے آج جشن عید میلادالنبی کے حوالے سے ٹی ہیرٹیج میوزیم (اولڈ ٹولنٹن مارکیٹ) میں سیرت النبی اور اسلامی موضوعات پر کتب کی تین روزہ نمائش کا افتتاح کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ سیکرٹری اوقاف و مذہبی امور محمد ثاقب عزیز‘ ڈی جی اوقاف و مذہبی امور محمد حسن رضوی کے علاوہ محکمہ کے دیگر افسران نے شرکت کی۔ صوبائی وزیر نے سیرت النبی اور اسلامی موضوعات کے حوالے سے نمائش میں رکھی گئی کتب کا بغور جائزہ لیا اور اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حضور نبی کریم کی سیرت ریاست کا پہلا قانون آئیڈیل مدینہ منورہ تھا۔ اسلامی تعلیمات کے فروغ کیلئے صوفیاءکرام اور اولیاءکرام نے برصغیر اپک و ہند میں نبی پاک کا جو پیغام دیا‘ وہ تمام دنیا کیلئے مشعل راہ ہے۔ پاکستان میں مسلک کی بنیاد پر تناﺅ کچاﺅ کا خاتمہ ضروری ہے تاکہ ملک و قوم کی ترقی کی راہ پر چلے اس کیلئے حضور کی سیرت پر چل کر راہ حاصل ہوگی۔ بعدازاں صوبائی وزیر اوقاف میاں عطاءمحمد مانیکا نے حضرت عزیزالدین المعروف پیر مکی کے سالانہ عرس کی تقریبات کا افتتاح کیا۔