منڈی بہائوالدین: چلڈرن ہسپتال میں ماہر ڈاکٹرز، عملہ کی کمی، 24 گھنٹے میں 4 بچے جاں بحق

منڈی بہائوالدین (نامہ نگار) گورنمنٹ چلڈرن ہسپتال میں ماہر ڈاکٹرز اور عملہ کی کمی کے باعث چلڈرن ہسپتال میں 24 گھنٹوں کے دوران چار بچے دم توڑ گئے، کروڑوں کی لاگت سے تعمیر ہونیوالا چلڈرن ہسپتال، چائلڈ سپیشلسٹ سمیت دیگر بنیادی عملہ کی شدیدکمی کے باعث بچوں کو علاج معالجہ کی بنیادی سہولیات کی فراہمی اور افادیت سے محروم ہوتا جا رہا ہے، ہسپتال میں جدید لیبارٹری اور ایکسرے مشین سمیت آئی سی یو وارڈ کروڑوں روپے کے جدید سازوسامان سے آراستہ ہے مگر متعلقہ سٹاف کی عدم تعیناتی کے باعث کروڑوں کی مشینری ناکارہ ہونے کے خدشات بھی بڑھ گئے ہیں، علاج معالجہ کی غرض سے لائے گئے مختلف عمروں کے چار بچے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ہسپتال میں دم توڑ چکے ہیں۔ ہسپتال انتظامیہ کے مطابق علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں، فوت ہونے والے چار بچوں کو تشویشناک حالت میں ہسپتال لایا گیا تھا، دوسری جانب شہریوں کاکہناہے کہ محض بلڈنگ یا مشینری کی فراہمی بھی علاج معالجہ کی سہولت کیلئے کافی نہیں ہے، ہسپتال میں ماہر عملہ اور چائلڈ سپشلسٹ کی فی الفور تعیناتی کو بھی یقینی بنایا جائے۔