مرغن غذائیں ‘ تمباکونوشی بلڈ پریشر کی بڑی وجوہات ہیں: طبی ماہرین

لاہور (نیوز رپورٹر) دنیا بھر میں ایک ارب سے زائد افراد ہائی بلڈ پریشر میں مبتلا ہیں جبکہ پاکستان میں 87 لاکھ مرد‘ 85 لاکھ خواتین اور 50 سال سے زائد عمر کے 50 فیصد افراد ہائی بلڈ پریشر کے مریض ہیں۔ آرام طلب زندگی‘ مرغن غذائوں کا بکثرت استعمال‘ ورزش نہ کرنا‘ ذہنی دبائو‘ گھریلو پریشانیاں‘ موٹاپا‘ نمک کا حد سے زیادہ استعمال‘ تمباکو اور شراب نوشی ہائی بلڈ پریشر کی بڑی وجوہات ہیں۔ بلڈ پریشر کا مناسب علاج نہ ہونے سے فالج‘ دماغی شریان پھٹنے اور دل کا دورہ پڑنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔ اس امر کا اظہار پروفیسر حکیم محمد اعجاز فاروقی‘ پروفیسر حکیم محمد احمد سلیمی‘ پروفیسر حکیم جاوید رسول‘ پروفیسر حکیم محمد افضل میو اور دیگر نے مجلس مذاکرہ میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔