تجاوزات‘ حستہ حال روڈ گندگی لٹکتے تار‘ آٹو پارٹس مارکیٹ مسائل کا گڑھ بن گئی

لاہور (رپورٹ احسن صدیق، تصاویر اعجاز لاہوری) صوبائی دارالحکومت میں منٹگمری روڈ پر قائم آٹو پارٹس مارکیٹ حکومتی اداروں کی جانب سے مسلسل نظر انداز کئے جانے کے باعث مسائل کا گڑھ بن کر رہ گئی ہے۔ منٹگمری روڈ پر تجاوزات اور سڑک پر ہی کھلی ورکشاپوں کے باعث ٹریفک کا نظام درہم برہم ہوچکا ہے جبکہ ٹریفک وارڈنز بھی ڈیوٹی سے غائب رہتے ہیں۔ منٹگمری روڈ کی سڑک ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے، سڑک پر جابجا گندگی کے ڈھیر لگے ہیں، بجلی کے لٹکتے پرانے تار کسی بھی وقت حادثے کا باعث بن سکتے ہیں۔ سٹریٹ لائٹس خراب ہیں رات کے اندھیرے کا فائدہ اٹھاتے ہوئے چور باآسانی واردات کرسکتے ہیں۔ مارکیٹ کی سکیورٹی کا کوئی انتظام نہیں۔ پولیس اہلکارمنٹگمری روڈ پر گشت نہیں کرتے۔ مارکیٹ میں خریداری کے لئے  آنے والے صارفین نے بتایا کہ یہاں ’’پھڑیا‘‘ مافیا کھلے عام صارفین کے ساتھ فراڈ کررہا ہے لیکن آج تک ان پھڑئیوں کے خلاف کوئی کارروائی نہیںکی گئی۔ یہ لوگ گاہکوں کو دکانوں تک جانے ہی نہیں دیتے اور ان کو غیر معیاری آٹو پارٹس مقررہ قیمتوں سے انتہائی زائد قیمتوں پر فروخت کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ منٹگمری روڈ پر پارکنگ کا سب سے بڑا مسئلہ ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ یہاں پارکنگ پلازہ بنایا جائے تاکہ منٹگمری روڈ پر ٹریفک کے مسائل حل ہوسکیں۔ نوائے وقت سروے میں منٹگمری روڈ کی انجمن تاجران کے صدر اعجاز بٹ، جنرل سیکرٹری وقار علی اور سیکرٹری اطلاعات ذیشان علی نے بتایا کہ منٹگمری روڈ کے مسائل برسوں سے برقرار ہیں اب تو اس کی صداقت سروے میں عیاں ہوگئی ہے۔ ہم ایک مدت سے منٹگمری روڈ پر ’’پھڑیا مافیا‘‘ کو ختم کرنے کے لئے جدوجہد کررہے ہیں لیکن آج تک کامیاب نہیں ہوسکے۔