خیبر پی کے اسمبلی نے فرسودہ رسم ”غگ“ کیخلاف قانون سازی کرلی


پشاور(بیورو رپورٹ) خیبرپی کے اسمبلی نے فرسودہ رسم غگ کے خلاف قانون سازی کرلی ہے اس حوالہ سے منظورکئے گئے بل کے تحت لڑکی کو ان کی مرضی اور والدین یا دوسرے ولی کی رضامندی کے بغیرکسی مردکے نام منسوب کرنے کو غیرقانونی قرار دیاگیا ہے اور ایسے کسی اقدام کے مرتکب شخص کو تین سے سات سال قیدکی سزا دینے کے علاوہ ان پر5لاکھ روپے جرمانہ بھی عائدکیا جائے گا۔ غگ کے بارے میںکہاگیا ہے کہ غگ ایک ایسی رسم، رواج اور عمل ہے جس کے ذریعہ ایک شخص زبردستی لڑکی کا ہاتھ مانگتا ہے یا اس بارے میں دعویٰ کرتاہے اور لڑکی ان کے والدین یا ولی کی رضامندی کے بغیر زبانی یا تحریری طور پر مقامی آبادی یا لوگوںکے سامنے کہہ دیتا ہے کہ خاتون اس کے ساتھ منسوب ہوگی ہے۔