شدت پسند راشد رﺅف مفرور یا ہلاک، معمہ حل نہیں ہوا


اسلام آباد (بی بی سی) پاکستانی نژاد برطانوی شدت پسند راشد رﺅف کے والدین کی طرف سے برطانوی حکومت کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنے کے اعلان سے پاکستانی میڈیا میں راشد رﺅف کی پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملے میں ہلاکت پر ایک مرتبہ پھر قیاس آرائیاں شروع ہو گئی ہیں۔ ان پر الزام تھا کہ انہوں نے مبینہ طور پر ہوائی جہازوں کو دھماکہ خیز مواد سے اڑانے کا منصوبہ بنایا تھا۔ راشد رﺅف کی موت اس سے پہلے بھی ایک معمہ بنی رہی۔بعض ماہرین نے سوال اٹھایا کہ آیا کوئی ایسی بات ہے جس کی وجہ سے پاکستان کے خفیہ ادارے چاہتے تھے کہ راشد رﺅف فرار ہوں۔ مشکوک حالات میں پولیس کی حراست سے دسمبر 2007ءکو فرار ہونے والے راشد رﺅف کی موت کا ماضی میں امریکہ نے دو دفعہ دعویٰ کیا ہے۔