ایم زیڈ کنول کے شعری مجموعے ”کائنات مٹھی میں“ کی تقریب رونما ئی

لاہور (پ ر) شاعری اظہار خیال کا بہترین ذریعہ ہے، صنف ادب میں شاعری کو خاص اہمیت حاصل ہے، وطن عزیز کے شاعر میر تقی میر، غالب، اقبال، فیض احمد فیض کے نقش قدم پر چل کر اردو ادب کے لئے خدمات سرانجام دے رہے ہیں جو کہ قابل ستائش ہے۔ ان خیالات کا اظہار مہمان خصوصی شریف اکیڈمی جرمنی شفیق مراد، ممتاز دانشور اعتبارساجد، قیوم نظامی مقصود چغتائی، اسلم سعدی، اقبال راہی، پروفیسرعباس، ولایت فاروقی، یونس بھٹی، مسرت کلانچوی، ڈاکٹر مروت زہرا سنبل، عشرت جبیں ارادت، شبنم ناکی ایڈووکیٹ، پروفیسر نذیر، حیدر بھنڈر، قاری بنیامین، عزیز شیخ اور دیگر مقررین نے عظیم آرا فاﺅنڈیشن پاکستان اورباقر پبلی کیشن کے زیراہتمام ممتاز شاعرہ ایم زیڈ کنول کے شعری مجموعے ”کائنات مٹھی میں“ کی تقریب رونمائی میں کیا۔ اس موقع پر معروف شاعر حسین مجروح، ناصر بشیر، ڈاکٹر صائم شکیل، ڈاکٹر شاہدرہ دلاور، غزالہ عالم، زبیدہ حیدر زیبی، جمیل، حکیم سلیم اختر، نصرت قمر، راﺅ شکیل، شاہین بھٹی، مہرالنسائ، غزالہ کوثر اور دیگر شعرا اور ادیبوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔